سی سی پی او لاہور نے غیر ضروری بیان دیا لیکن غیر قانونی نہیں، اسد عمر

وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ موٹروے پر زیادتی کی شکار ہونے والی خاتون سے متعلق سی سی پی او لاہور نے غیر ضروری بیان دیا لیکن یہ غیر قانونی نہیں ہے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے جیو نیوز کے پروگرام کیپیٹل ٹاک میں میزبان حامد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

وفاقی وزیر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سی سی پی او لاہور کے اس بیان پر کیا قانونی ایکشن لیا جائے۔

اسد عمر نے لاہور پولیس چیف کے بیان پر ردِ عمل میں کہا کہ میں خود بھی اس بیان سے اتفاق نہیں کرتا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز لاہور کے علاقے گجرپورہ میں موٹروے پر ایک خاتون کو اس کے بچوں کے سامنے ہی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

درندہ صفت دو افراد نے موٹر وے پر کھڑی گاڑی کا شیشہ توڑ کر خاتون اور اس کے بچوں کو نکالا، ملزمان خاتون کو موٹر وے کے گرد لگی جالی کاٹ کر قریبی جھاڑیوں میں لے گئے۔

بعدازاں سی سی پی او لاہور نے متاثرہ خاتون پر ہی سوالات اٹھادیے اور کہا کہ اکیلی خاتون کو آدھی رات میں موٹروے سے جانے کی ضرورت کیا تھی؟

سی سی پی او لاہور کا کہنا تھا کہ وہ جی ٹی روڈ سے کیوں نہیں گئيں، جہاں آبادی موجود ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے